بنیادی صفحہ / پ‍‍شاور / امن کمیٹی کے سربراہ میرعالم خان آفریدی کی قتل کی ٹھوس تحقیقات کی جائے

امن کمیٹی کے سربراہ میرعالم خان آفریدی کی قتل کی ٹھوس تحقیقات کی جائے

باڑہ قبیلہ سپاہ کے مشران نے حکومت اور سکیورٹی فورسز سے مطالبہ کیا ہے کہ دو ہفتے قبل پشاور کے بندوبستی علاقہ اچینی خوڑ میں ٹارگٹ کلرز کی جانب سے قتل کئے گئے امن کمیٹی کے سربراہ میرعالم خان آفریدی کی قتل کی ٹھوس تحقیقات کی جائے اور قتل میں ملوث درپردہ عناصر کو فوری انصاف کے کٹہرے میں لاکھڑا کیا جائے ۔ان خیالات کا اظہار سپاہ قبیلے کے قومی سرشتہ اور قومی عمائدین نے سپین قبر چوک سپاہ میں منعقدہ ایک گرینڈ جرگہ میں کیا ہے ۔جرگہ میں سابق پارلیمنٹیرین حاجی محمد شاہ ، ملک سید مرجان ،ملک حلیم گل ،ملک محمد علی،خان ولی اور درجنوں سپاہ قبیلے کے ذیلی تپوں کے مشران موجود تھے ۔اس موقع پر علاقائی عمائدین نے ملک میر عالم خان آفریدی کی قتل کو دہشت گردی اور ٹارگٹ کلنگ کا ایک خطرناک واقعہ قرار دیا اور قبیلے کے مشران نے قتل کی شدید الفاظ میں مذمت کی ۔جرگہ مقررین کا کہنا تھا کہ ملک میر عالم کا قتل پورے قبیلے کی قتل ہے اور دہشت گردی کے اس واقعے میں بعض خفیہ عناصر بھی ملوث ہیں جس کو بے نقاب کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے ۔انہوں نے کہا کہ 19جنوری کا یہ واقعہ انتہائی حساس اور تشویشناک ہے کیونکہ شہید میر عالم کی کوئی ذاتی دشمنی نہیں تھی بلکہ انہوں نے قیام امن میں کردار ادا کرنے کی وجہ سے جان کی قربانی دی ہے ۔علاقائی مشران نے واقعے کی نوعیت کو دہشت گردی سے جوڑ کر اس کے پیچھے کارفرما کردار کو سامنے لانے کی اپیل کی اور اس سلسلے میں قومی مشران نے عسکری اور سول انتظامیہ دونوں کو تحریری درخواستیں بھی بھیجنے کا فیصلہ کیا جس میں قومی مشران نے موقف اختیار کیا ہے کہ میر عالم خان آفریدی کو قتل کرنے والے گرفتار افراد نے دوران تفتیش جن ملوث عناصر کا ذکر کیا ہے ان عناصر کو انصاف کے کٹہرے میں لانا عسکری اور سول انتظامیہ کی ذمہ داری ہے اور اگر قتل کی تحقیقات میں سست روی سے کام لیا گیا تو اس کے بہت بھیانک نتایج نکلیں گے ۔ بعد اذاں قومی مشران کی ایک وفد نے شاہ کس لیوی سنٹر میں سیکٹر کمانڈر اور دیگر سکیورٹی حکام سے بھی ملاقات کی جہاں وفد شرکاء نے میر عالم قتل کے بارے میں یہ بھی شبہ ظاہر کیا کہ قتل میں عسکری قیادت کو تسلیم شدہ بعض عناصر بھی شامل ہیں جس کے باعث علاقے میں خوف و ہراس کی فضا بڑھ رہی ہے جس پر سیکٹر کمانڈر نے مذکورہ قتل واقعے میں سپاہ قبیلے کے ساتھ مکمل تعاون کرنے کی یقین دہانی کرائی ۔واضح رہے کہ سپاہ قبیلے کے عمائدین نے میر عالم قتل تحقیقات کے سلسلے میں قوم سپاہ کا ایک اور گرینڈ جرگہ آئندہ ہفتے کے روز باڑہ میں بلانے کا فیصلہ کیا ہے جس میں آئندہ کا لائحہ عمل تیار کرنے بھی فیصلہ کیا ۔

تعارف: عارف محمود

جواب دیجئے