بنیادی صفحہ / تعلیم و صحت / سگریٹ نوشی ڈی این اے پر تین دہائیوں تک اثر انداز ہوتی رہتی ہے: تحقیق

سگریٹ نوشی ڈی این اے پر تین دہائیوں تک اثر انداز ہوتی رہتی ہے: تحقیق

سگریٹ نوش ہوجائیں ہوشیار کیونکہ نئی تحقیق کے مطابق سگریٹ نوشی ڈی این اے پر تین دہائیوں تک اثر انداز ہوتی رہتی ہے۔

واشنگٹن: (ویب ڈیسک) امریکا کے طبی ماہرین کی تحقیق میں انکشاف کیا گیا ہے کہ سگریٹ نوشی نہ صرف انسانی صحت کیلئے انتہائی خطرناک ہے بلکہ اس کا زہر 30 سال تک ڈی این اے میں موجود رہتا ہے۔ مختلف ممالک میں تمباکو نوشی کیخلاف آگاہی مہم سے اس کے استعمال میں نمایاں کمی ہوئی ہے تاہم طویل عر صے تک استعمال کرنے کے بعد اسے ترک کرنے والے افراد بھی مختلف امراض کے شکار ہو سکتے ہیں۔

تعارف: haroon

جواب دیجئے